امریکا کا روس کے نجی ملٹری گروپ ‘ویگنر’ کو جرائم پیشہ قرار دینے کا اعلان

0
50

وائٹ ہاؤس نے روسی صدر ولادی میر پوٹن کے حمایت یافتہ نجی ملٹری گروپ ‘ویگنر’ کو جرائم پیشہ قرار دینے کا اعلان کرتے ہوئے امریکہ میں اس کے اثاثے منجمد اور کاروباری لین دین پر پابندی لگا دی ہے۔

جمعے کو وائس آف امریکہ کی پیٹسی ودا کوسوارا کو دیے گئے خصوصی انٹرویو میں امریکہ کے قومی سلامتی کونسل کے ترجمان جان کربی نے کہا کہ یہ اقدام براہِ راست اس آرگنائزیشن کو ٹارگٹ کرے گا اور امریکہ یا کسی بھی امریکی ادارے سے اس گروپ کو رقوم کی منتقلی کا عمل روک دے گا۔ اس سے دیگر ملکوں کو بھی یہ پیغام جائے گا کہ وہ بھی اس گروپ کے ساتھ لین دین سے گریز کریں۔

جان کربی کا کہنا تھا کہ اس اقدام سے پہلے ہی ہم روس پر مختلف پابندیاں لگا رہے ہیں اور ان پابندیوں سے ‘ویگنر گروپ’ جیسے پرائیویٹ ملٹری کانٹریکٹرز پر بھی خاصا اثر پڑا تھا۔

خیال رہے کہ ‘ویگنر گروپ’ کو روس کے حمایت یافتہ جنگجوؤں کا ایک گروپ سمجھا جاتا ہے جو یوکرین جنگ میں حصہ لے رہا ہے، اسے روسی صدر ولادی میر پوٹن کی پرائیویٹ آرمی بھی کہا جاتا ہے۔

روس پر یہ الزام بھی لگتا رہا ہے کہ اس نے اپنی جیلوں میں قید ہزاروں سزا یافتہ قیدیوں کو بھی ”ویگنر گروپ’ میں شامل کر کے جنگ میں جھونک رکھا ہے۔ ان پر بڑے پیمانے پر جنگی جرائم اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے الزامات بھی عائد ہوتے رہے ہیں۔ روس ان الزامات کی تردید کرتا رہا ہے۔

اس گروپ سے وابستہ فوجی اس سے قبل کرائمیا، شام، لیبیا اور وسطی افریقی ملکوں میں بھی تعینات رہ چکے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here