قلات اور خضدار حملوں کی ذمہ داری قبول کرتے ہیں، بی ایل اے

0
325

بلوچ لبریشن آرمی کے ترجمان جیئند بلوچ نے قلات اور خضدار میں پاکستانی فورسز پر حملوں کی ذمہ داری قبول کرلی۔

میڈیا کو جاری کردہ اپنے ایک پریس ریلیز میں ان کا کہنا تھا کہ بلوچ لبریشن آرمی کے سرمچاروں نے قلات اور خضدار میں دو مختلف حملوں میں قابض پاکستانی فوج کے چار اہلکاروں سمیت فوج کے ایک مقامی آلہ کار کو ہلاک کردیا۔

بی ایل اے کے سرمچاروں نے قلات کے علاقے جوہان میں ازبوتکی کے مقام پر پاکستان فوج کے قافلے میں شامل ایک گاڑی کو آئی ای ڈی حملے میں نشانہ بنایا، جس کے نتیجے میں گاڑی مکمل تباہ ہوگئی جبکہ اس میں سوار چار اہلکار ہلاک اور دو زخمی ہوگئے۔

دریں اثناء ایک اور حملے میں بلوچ لبریشن آرمی کے سرمچاروں نے خضدار کے علاقے زہری میں پاکستانی خفیہ ادارے ایم آئی کے ایک اہم کارندے حفیظ اللہ کو ہلاک کردیا۔

مذکورہ شخص زہری و گردنواح میں قابض فوج کے ہمراہ بلوچ نوجوانوں کو جبری لاپتہ کرنے میں ملوث تھا۔ بلوچ لبریشن آرمی واضح کرتی ہے کہ مختلف بھیس میں چھپے آلہ کاروں کو حفیظ اللہ کی طرح انکے انجام تک پہنچایا جائے گا۔

بلوچ لبریشن آرمی ان دونوں حملوں کی ذمہ داری قبول کرتی ہے۔ آزاد بلوچ وطن کے حصول تک ہماری جدوجہد جاری رہیگی۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here