ہدایت لوہار قتل : پانچ روز سے جاری دھرناختم،سندھ بھر میں ریلیوں کا اعلان

0
71

سندھی قوم پرست رہنما اور وائس فار مسنگ پرسنز آف سندھ کے سربراہ سورٹھ لوہار اور سسوئی لوہار کے والد ہدایت لوہار کے ریاستی قتل خلاف دھرنا مسلسل پانچ روز تک جاری رہنے کے بعد گذشتہ شب پریس کانفرنس کے بعد اختتام پذیر ہوگیا۔

سورٹھ لوہار اور سسئی لوہار نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہناتھا کہ ہم نے اپنے والد کے قتل کی ایف آئی آر داخل کرنے کے لیے کورٹ میں پٹیشن دائر کرکے قانونی پراسز کو آگے بڑھایا ہے لیکن پاکستانی عدالتوں سے ہمیں انصاف کی کوئی زیادہ امید نہیں ہے، ہمارے لیے انصاف کی عدالت ہماری سندھی قوم ہے۔ ہم اپنی فریاد سندھی قوم کے پاس لےجا رہے ہیں ، اس سلسلے میں ہماری جدوجہد کے دوسرے مرحلے میں آج سے سندھ بھر میں احتجاجی ریلیاں نکالنے کی کال دیتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ جدوجہد کے تیسرے مرحلے میں ہم سندھ میں ایک بڑے احتجاج کا اعلان کریں گے۔ ہماری یہ جدوجہد صرف ہمارے بابا کے ریاستی قتل کے خلاف نہیں بلکہ سندھ کے ان تمام مظلوم لوگوں کے ناحق ریاستی قتل ، جبری گمشدگیوں اور ظلم اور بربریت کے خلاف تب تک جاری رہے گی جب تک یہ فاشسٹ ریاست ہماری سرزمین پر فوجی قبضہ قائم رکھ کر اپنی بندوق کے زور پر ہمارے لوگوں پر یہ ظلم جبر اور بربریت کرتی رہے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستانی فوج نے بابا شہید ہدایت لوہار کو سندھ کی آزادی کی جدوجہد کرنے کی وجہ سے شہید کیا ہے۔ شہید ہدایت لوہار سمیت سندھ کے تما م شہیدوں کا بدلا ہم اپنے وطن کی آزادی کی صورت میں لیں گے۔ جدوجہد جاری رہےگی۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here