قلات وکیچ سے پاکستانی فورسز ہاتھوں 4 نوجوان جبراً لاپتہ، ایک بازیاب

0
27

پاکستانی فوج و خفیہ اداروں نے بلوچستان میں بلوچ نوجوانون کی جبری گمشدگی میں مکمل شدت لائی ہے ۔

قلات اور تربت سے فورسز نے مزید 4 نوجوانوں کو حراست میں لیکر جبری طور پر لاپتہ کردیا ہے۔

جبری گمشدہ کئے گئے 2 نوجوانوں کی شناخت 13 سالہ بیبگر ولد امام دین مینگل اور 18 سالہ عبید ولد میر جلال خان کے ناموں سے ہوگئی جبکہ باقی 2 نوجوانوں کی اب تک شناخت نہ ہوسکی۔

اطلاعات کے مطابق گزشتہ روز قلات کے علاقے مکھی سے فورسز نےبیبگر ولد امام دین مینگل نامی ایک 13 سالہ کمسن بچے کو دو اور نوجوانوں کے ساتھ جبراً حراست میں لے کر نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے۔

دوسری جانب ضلع کیچ کے علاقے بالیچہ زامران بازار سے فورسز نے عبید ولد میر جلال خان کو گزشتہ شپ گھر سے اٹھا کر لاپتہ کردیا ہے۔

مذکورہ نوجوان کی عمر 18 سال بتایا جارہا ہے ۔

جبکہ بالیچہ سے گزشتہ دنوں جبری لاپتہ مہروان بلوچ کل بازیاب ہوکر گھر پہنچ گیا ہے۔

لواحقین نے بازیابی کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ انہیں گذشتہ دنوں گھر سے اٹھاگیا تھا تاہم آج اسے چھوڑ دیا گیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here